امن کے وقت میں صرف حقیقت پسندانہ، مشن پر مبنی تربیت ہی میدان جنگ میں بہترین کارکردگی کی ضمانت ہو سکتی ہے،آرمی چیف

پاک فوج کے سربراہ جنرل سید عاصم منیر

راولپنڈی۔21نومبر (اے پی پی):پاک فوج کے سربراہ جنرل سید عاصم منیر نے کہا ہے کہ امن کے وقت میں صرف حقیقت پسندانہ اور مشن پر مبنی تربیت ہی میدان جنگ میں بہترین کارکردگی کی ضمانت ہوسکتی ہے۔

وہ منگل کو اسٹرائیک کور کی کور سطح کی اجتماعی تربیتی مشق کے دورہ کے موقع پر خطاب کررہے تھے، مشق کا مقصد جارحانہ آپریشنل تصورات کو جانچنا ہے۔آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف نے جدید ترین وی ٹی ۔4ٹینکوں سے لیس آرمرڈ فارمیشن کی قیادت میں کی گئی پیچیدہ مشقوں کا ایک متاثر کن مظاہرہ بھی دیکھا۔

جنرل سید عاصم منیر نے مشق میں حصہ لینے والے فوجی جوانوں سے ملاقات کی اور ان کے جذبے، عملی کارکردگی اور پیشہ ورانہ مہارت کو سراہا۔آرمی چیف نے کثیر الجہتی خطرے کا جواب دینے کے لیے جنگی تیاری اور ذہنی صلاحیت کی اہمیت کو اجاگر کیا۔ انہوں نے تیزی سے بدلتے ہوئے خطرے کے ماحول کے پیش نظر مختلف ہتھیاروں کے حصول کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے رات کے آپریشنز میں حاصل ہونے والی مہارت کو بھی سراہا۔

آرمی چیف نے اس بات کا اعادہ کیا کہ امن کے وقت میں صرف حقیقت پسندانہ، مشن پر مبنی تربیت ہی میدان جنگ میں بہترین کارکردگی کی ضمانت دے سکتی ہے۔قبل ازیں آمد پر کمانڈر منگلا کور نے آرمی چیف کا استقبال کیا