این ڈی ایم اے کی تمام قومی اور صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹیز اور متعلقہ محکموں کو احتیاطی انتظامات یقینی بنانے سے متعلق ایڈوائزری جاری

NDMA
NDMA

اسلام آباد۔23فروری (اے پی پی):نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) نے تمام قومی اور صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹیز اور متعلقہ محکموں کو کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے احتیاطی انتظامات کو یقینی بنانے سے متعلق ایڈوائزری جاری کر دی۔ این ڈی ایم اے ٹیکنیکل ٹیم اور پاکستان محکمہ موسمیات (پی ایم ڈی) نے پیش گوئی کی ہے کہ ملک میں مغربی لہر 25 فروری 2024 سے داخل ہو رہی ہے اور یہ 27 فروری تک برقرار رہ سکتی ہے۔

اس موسمی نظام کے زیر اثر خیبرپختونخوا (کے پی)، گلگت بلتستان (جی بی)، مری، گلیات اور آزاد جموں و کشمیر (اے جے کے) میں آندھی اور گرج چمک کے ساتھ بارش اور پہاڑیوں پر برف باری کا امکان ہے۔ مزید یہ کہ برف باری سے مری، گلیات، ناران، کاغان، دیر، سوات، کوہستان، مانسہرہ، ایبٹ آباد، شانگلہ، استور، ہنزہ، اسکردو، وادی نیلم، باغ، پونچھ، حویلیاں اور دیگر علاقوں میں سڑکیں بند ہوسکتی ہیں۔

سیاحوں کو مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ اس دوران محتاط رہیں اور سفر سے پہلے موسم کی تازہ ترین معلومات دیکھیں۔ متاثرہ علاقوں میں بجلی اور دیگر سروسز متاثر ہو سکتی ہیں۔ برف باری اور بارشوں سے درجہ حرارت میں نمایاں کمی کا امکان ہے۔ بلوچستان اور جنوبی پنجاب میں موسلادھار بارش مقامی نالوں میں طغیانی کا باعث بن سکتی ہے۔ لینڈ سلائیڈنگ اور مٹی کے تودے گرنے کی وجہ سے ممکنہ سڑکوں کو روک سکتے ہیں۔

مزید برآں کاشتکاروں کو مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ محتاط رہیں اور موسم کے دوران اس کے مطابق زرعی سرگرمیوں کی منصوبہ بندی کریں۔ تمام صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹیز، گلگت بلتستان ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی، اسٹیٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی اور اسلام آباد کیپیٹل ٹیریٹری انتظامیہ، نیشنل ہائی وے اتھارٹی، نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس، فرنٹیئر ورکس آرگنائزیشن (ایف ڈبلیو او)، ریسکیو 1122، ڈیم اتھارٹیز، متعلقہ محکمے، وزارتیں اور وفاقی ادارے اپنے مینڈیٹ کے مطابق ضروری اقدامات کریں ۔