ایچ ای سی کے زیراہتمام دو روزہ قومی کنونشن بعنوان یوتھ پیوٹ آف نیشنل انٹیگریشن کا آغاز

HEC warning
HEC warning

اسلام آباد۔23جنوری (اے پی پی):ہائر ایجوکیشن کمیشن (ایچ ای سی)کے زیراہتمام جناح کنونشن سنٹر اسلام آباد میں دو روزہ قومی کنونشن بعنوان یوتھ پیوٹ آف نیشنل انٹیگریشن شروع ہوگیا۔یونیورسٹی کے طلبا کی عظیم الشان اسمبلی کے انعقاد کا مقصد ملک کی نوجوان آبادی کی غیرمعمولی کامیابیوں کو منانا ، قومی یکجہتی اور بین الصوبائی ہم آہنگی کے جذبے کو فروغ دینا ہے۔ افتتاحی تقریب کے مہمان خصوصی چیئرمین سینیٹ محمدصادق سنجرانی تھے۔ وفاقی وزیر تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت مدد علی سندھی، سینیٹر بہرامند تنگی، چیئرمین ایچ ای سی ڈاکٹر مختار احمد، ایگزیکٹیو ڈائریکٹر ایچ ای سی ڈاکٹر ضیاء القیوم، وائس چانسلرز، فیکلٹی ممبران اور ملک بھر سے طلبا کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

استقبالیہ کلمات میں چیئرمین ایچ ای سی ڈاکٹر مختار احمد نے کہا کہ قومی کنونشن کےانعقادکا مقصد اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ پاکستان کے نوجوان ملک کی ترقی کیلئے اپنی صلاحیتوں کو بروئے کار لا سکیں، قومی ترقی کی راہ ہموار کرنے کیلئے نوجوانوں کو یکساں مواقع فراہم کرنا ضروری ہے۔انہوں نے زور دیا کہ ہمیں اپنے مادر وطن کی خاطر ذاتی مفادات اور اختلافات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے متعلقہ شعبوں میں اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ اس موقع پر زندگی کے مختلف شعبوں میں اعلیٰ کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والوں نے نوجوانوں کی حوصلہ افزائی کیلئے اپنی متاثر کن کہانیاں پیش کیں۔

ایم بی بی ایس میں 29 گولڈ میڈل جیتنے والے ڈاکٹر حافظ ولید علی، سبل افضل، فائٹر پائلٹ آفیسر پاکستان ایئر فورس علی گوہر، ایک فنکار جو بجلی کا کرنٹ لگنے سے اپنے بازو کھو چکے ہیں اور اپنے پیروں سے بنائی ہوئی پینٹنگز کے لیے اعزاز حاصل کیا ، بلوچستان کی پہلی خاتون مسیحی اسسٹنٹ کمشنرماریہ شمعون، ورلڈ فلم فیسٹیول 2023 کے فاتح عمر عادل، زیاد سسٹین ایبلٹی پرائز 2024 کی فاتح سمیہ بی بی، شاندار بین الاقوامی ایتھلیٹ امت الرحمن، بین الاقوامی تائیکوانڈو کھلاڑی منیشا علی اور ملیحہ علی نے طلبا کی حوصلہ افزائی کے لیے اپنی زندگی کی متاثر کن کہانیاں سنائیں۔