برطانوی کلب کرکٹر رضوان جاوید پر کرپشن کے الزام میں ساڑھے 17سال کی طویل پابندی عائد

ICC
ICC

دبئی۔15فروری (اے پی پی):آئی سی سی نے برطانوی کلب کرکٹر رضوان جاوید پر کرپشن کے الزام میں ساڑھے 17سال کی پابندی عائد کردی ہے، آئی سی سی کی جانب سے اب تک یہ دوسری طویل ترین سزا ہے۔ رضوان جاوید کو امارات کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن کوڈ کی پانچ مختلف خلاف ورزیوں کا مرتکب پایا گیا۔

رضوان جاوید ان آٹھ کھلاڑیوں اور آفیشلز میں شامل تھے جن پر گزشتہ سال آئی سی سی کی جانب سے ابوظہبی ٹی ٹین لیگ 2021ء میں بدعنوانی کے الزامات عائد کئے گئے تھے۔ آئی سی سی کی جانب سے سب سے طویل پابندی زمبابوے کے کرکٹ آفیشل راجن نیئر پر2018 میں عائد گئی تھی جس کی مدت20 سال ہے۔

آئی سی سی کی قانونی دستاویز کے مطابق رضوان جاوید نے چیڈل ہلمے کرکٹ کلب کی طرف سے اگست2019ء تک چیشائر کرکٹ لیگ میں حصہ لیا۔

گزشتہ سال آئی سی سی نے بنگلہ دیش کے بین الاقوامی کرکٹر ناصر حسین سمیت آٹھ افراد پر فرد جرم عائد کی تھی، ناصر حسین کو تحقیقات میں معاونت کرنے پر دو سال کی پابندی کا سامنا کرنا پڑا جبکہ رضوان جاوید نے الزامات کا جواب نہیں دیا اور نہ ہی تعاون کی پیشکش کی۔