دورہ ہیروشیما کے دوران دنیا سے جوہری ہتھیاروں کے خاتمے کی اپیل کریں گے، سیکرٹری جنرل قوم متحدہ

ٹوکیو۔5اگست (اے پی پی):اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوترش نے کہا ہے کہ وہ عنقریب ہیروشیما کے دورے کے دوران عالمی تخفیف جوہری اسلحہ کے لئے اپیل کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ جاپانی خبررساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوترش نے کہا کہ وہ ہیروشیما سے یہ پیغام بھیجیں گے کہ جوہری ہتھیاروں کا استعمال ’’قطعی طور پر ناقابل قبول‘‘ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا کو ہیروشیما اور ناگاساگی کے ایٹمی بم حملوں کے المیوں سے سبق حاصل کرنا چاہیے۔انہوں نے کہا کے بیسویں صدی کے آخر میں عالمی تخفیف جوہری اسلحہ پر بہت زیادہ کام کیا گیا تھا لیکن اب صورتحال اس کے برعکس ہے۔

سیکرٹری جنرل نے کہا کہ اب ایک بار پھر جوہری ہتھیاروں اور ان میں جدت لانے کے لئے سرمایہ کاری دیکھنے میں آ رہی ہے۔ انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ نیویارک میں جاری جوہری ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ کے جائزہ اجلاس میں تخفیف اسلحہ تحریک کو دوبارہ فعال کیا جائے گا۔انہوں نے جاپان کے کردار کے حوالے سے بھی امید کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ جاپان سے بہتر کوئی بھی اس پوزیشن میں نہیں ہے کہ وہ جوہری طاقتوں کو یہ کہے کہ جوہری ہتھیاروں کا استعمال “قطعی طور پر ناقابل قبول” ہے۔