ڈاکٹرفائی کی مسئلہ کشمیر کے حوالے سے اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عملدرآمد کے لیے فیصلہ کن اقدامات کی اپیل

غلام نبی فائی
غلام نبی فائی

واشنگٹن۔18ستمبر (اے پی پی):اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 78ویں اجلاس سے خطاب کے لئے عالمی رہنمائوں کے نیویارک پہنچنے پر ورلڈ فورم فار پیس اینڈ جسٹس کے چیئرمین اور ممتاز کشمیری رہنما ڈاکٹر غلام نبی فائی نےمسئلہ کشمیر کے حوالے سے اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عملدرآمد کے لیے فیصلہ کن اقدامات کی اپیل کی ہے۔کشمیر میڈیاسروس کے مطابق ایک بیان میں ڈاکٹر فائی نے کہا کہ عالمی طاقتوں کی خاموشی نے اقوام متحدہ کے چارٹر کا دستخط کنندہ ہونے کے باوجود بھارت کو بے گناہ کشمیریوں کے خلاف انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں جار ی رکھنے کا حوصلہ دیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ کشمیر میں اقوام متحدہ کے چارٹر یا سلامتی کونسل کی استصواب رائے کی قراردادوں پر عمل درآمد کا مطالبہ کرنا جرم ہے جو بذات خود اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی توہین ہے۔ہم یہ اچھی طرح جانتے ہیں کہ تنازعات کو روکنے کا سب سے امید افزاطریقہ اس کی وجوہات کو ختم کرنا ہے۔ انہوں نے کہاکہ بہت سے جنوبی ایشیائی ماہرین کی یہ رائے تسلیم کی جاتی ہے کہ بھارت اور پاکستان کے درمیان کشیدگی کی بنیادی وجہ مسئلہ کشمیر کا حل نہ ہونا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کو بین الاقوامی حیثیت حاصل ہے جس کے بارے میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی متعدد قراردادیں موجودہیں جن میں اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کے کشمیری عوام کے حق خود ارادیت کو تسلیم کیاگیاہے۔ انہیں یہ حق دیا جانا چاہیے۔

وقت گزر رہاہے اورمسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر گزرنے والا ہر دن ہمیں ایک ایسی تباہی کے قریب لے جارہا ہے جس کی کوئی حد نہیں ہوگی۔انہوں نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے الفاظ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یہ بے حسی یا عدم فیصلے کا وقت نہیں بلکہ حقیقی اور عملی حل کے لیے اکٹھے ہونے کا وقت ہے۔