غزہ میں اسرائیلی فوجی جارحیت ، رفح شہر پر اندھا دھند حملوں میں شدت کی مذمت سے متعلق او آئی سی کے بیان کی توثیق کرتے ہیں، ترجمان دفتر خارجہ

Pakistan and Tanzania
Pakistan and Tanzania

اسلام آباد۔15فروری (اے پی پی):پاکستان نے کہا ہے کہ ہم اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کے غزہ میں جاری اسرائیلی فوجی جارحیت اور رفح شہر پر اندھا دھند حملوں میں شدت کی سخت الفاظ میں مذمت کرنے سے متعلق بیان کی توثیق کرتے ہیں۔ دفتر خارجہ کی ترجمان ممتاز زہرہ بلوچ نے جمعرات کو اسلام آباد میں پریس بریفنگ میں کہا کہ اسلامی تعاون تنظیم نے اسرائیلی جارحیت کی رفتار میں توسیع اور اضافے پر خطرے کی گھنٹی بجاتے ہوئے فلسطینی عوام کو ان کی اپنی سرزمین سے زبردستی بے گھر کرنے کی ناقابل قبول کوشش کے خلاف خبردار کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ رفح میں 14 لاکھ بے گھر افراد کے خلاف اسرائیل کا بے رحمانہ حملہ بین الاقوامی عدالت انصاف کے عبوری حکم میں بیان کردہ عارضی اقدامات کی صریح خلاف ورزی ہے۔ ترجمان نے کہا کہ پاکستان اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ اقوام متحدہ کے چارٹر کے تحت اپنی ذمہ داری پوری کرے اور جنگ بندی نافذ کرنے اور فلسطینی عوام کے قتل عام کو بند کرانے کے لیے فوری مداخلت کرے۔

انہوں نے کہا کہ ہم کچھ ممالک کی طرف سے اقوام متحدہ کی ریلیف اینڈ ورکس ایجنسی کی فنڈنگ کو معطل کرنے کے فیصلے کو فوری طور پر واپس لینے کا بھی مطالبہ کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ مزید اموات اور قحط سے متاثر ہونے اور مناسب طبی امداد کی عدم دستیابی کو روکنے کے لیے غزہ کا محاصرہ ختم کیا جانا چاہیے۔ ترجمان نے کہا کہ پاکستان غزہ کے محصور عوام کی اپنی غیر متزلزل سفارتی، اخلاقی، سیاسی اور انسانی حمایت میں پرعزم ہے۔