مس انفارمیشن اور ڈس انفارمیشن پوری دنیا کا مسئلہ ہے، سوشل میڈیا پر سب سے بڑا چیلنج جعلی خبریں ہے، مرتضیٰ سولنگی

نگران وفاقی وزیر اطلاعات مرتضیٰ سولنگی کا سینئر اینکر پرسن ارم چوہدری کے انتقال پر اظہار افسوس

اسلام آباد۔20اکتوبر (اے پی پی):نگران وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مرتضیٰ سولنگی نے مس انفارمیشن، ڈس انفارمیشن اور فیک نیوز پر قابو پانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ مس انفارمیشن، ڈس انفارمیشن اور فیک نیوز پوری دنیا کا مسئلہ ہے، سوشل میڈیا پر سب سے بڑا چیلنج جعلی خبریں ہیں، صحافیوں کو تربیت کی فراہمی کیلئے برطانیہ کے جدید میڈیا نصاب سے مدد لی جائے گی، برطانیہ کے ساتھ میڈیا کے شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے کے خواہاں ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو یہاں برطانوی ہائی کمیشن کی پولیٹیکل قونصلر مس زوئی ویئر سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

ملاقات میں پاک برطانیہ تعلقات، نفرت انگیز بیانیہ، مس انفارمیشن، ڈس انفارمیشن کے خاتمے، میڈیا کے شعبوں میں تعاون کے فروغ اور یو این ڈی پی کے سیف ڈیجیٹل انوائرمنٹ پروگرام پر تبادلہ خیال ہوا۔ نگران وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاکستان برطانیہ کے ساتھ تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے، برطانیہ کے ساتھ میڈیا کے شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے کے خواہاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یو این ڈی پی کے سیف ڈیجیٹل انوائرمنٹ پروگرام سے غلط معلومات اور نفرت انگیز بیانیہ کو پہچانے میں مدد ملے گی۔ یہ پروجیکٹ آن لائن سپیس پر غلط اور نفرت انگیز بیانیہ کی نشاندہی کرنے والے اہم سرکاری اداروں اور اہلکاروں کے علم، استعداد اور ہنر کو مزید بہتر بنائے گا۔

نگران وفاقی وزیر نے کہا کہ مس انفارمیشن، ڈس انفارمیشن اور فیک نیوز پوری دنیا کا مسئلہ ہے جس پر قابو پانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پر سب سے بڑا چیلنج جعلی خبریں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صحافیوں کو تربیت کی فراہمی کیلئے برطانیہ کے جدید میڈیا نصاب سے مدد لی جائے گی، اس ضمن میں انفارمیشن سروس اکیڈمی اہم کردار ادا کرے گی، انفارمیشن سروس اکیڈمی میں نفرت انگیز بیانیہ اور غلط معلومات کے حوالے سے آگاہی سیشنز بھی منعقد کئے جائیں گے۔

ملاقات میں فلم اور ڈرامہ کے شعبوں میں تعاون پر بھی تبادلہ خیال ہوا۔ مرتضیٰ سولنگی نے کہا کہ فلم اور ڈرامہ کسی بھی ملک کی ثقافت اور مثبت تشخص کو اجاگر کرنے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ وزیر اطلاعات نے برطانوی پولیٹیکل قونصلر کو ملک میں انتخابات کے حوالے سے سرگرمیوں سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ انتخابات وقت پر ہوں گے، انتخابات کی تاریخ کا اعلان الیکشن کمیشن کرے گا۔ برطانوی پولیٹیکل قونصلر نے پاکستان اور برطانیہ کے درمیان دو طرفہ تعلقات کے فروغ کیلئے اپنے بھرپور تعاون کا یقین دلایا۔