نینو ٹیکنالوجی، روبوٹک سرجری، پرسنلائیزڈ میڈیسن اور وسیع سپیکٹرم آرگن ٹرانسپلانٹ آج کے ہیلتھ کیئر سسٹم کی پہچان ہیں، ائیر چیف مارشل ظہیر احمد بابر

نینو ٹیکنالوجی، روبوٹک سرجری، پرسنلائیزڈ میڈیسن اور وسیع سپیکٹرم آرگن ٹرانسپلانٹ آج کے ہیلتھ کیئر سسٹم کی پہچان ہیں، ائیر چیف مارشل ظہیر احمد بابر

اسلام آباد۔23جون (اے پی پی):پاک فضائیہ کے سربراہ ائیر چیف مارشل ظہیر احمد بابرسدھو نے فضائیہ میڈیکل کالج اسلام آباد میں دی جانے والی تعلیم کے اعلٰی معیار کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ “نینو ٹیکنالوجی، روبوٹک سرجری، پرسنلائیزڈ میڈیسن اور وسیع سپیکٹرم آرگن ٹرانسپلانٹ آج کے ہیلتھ کیئر سسٹم کی پہچان ہیں” میڈیکل گریجویٹس کو صحت کو درپیش موجودہ چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کے لیے اپنے علم کو جدید خطوط پر استوار کرنے کی ضرورت ہے۔

ترجمان پاک فضائیہ کے مطابق وہ جمعرات کو ائیر یونیورسٹی اسلام آباد میں فضائیہ میڈیکل کالج اسلام آباد کیمپس کے پہلے ایم بی بی ایس بیچ کے کانووکیشن سے خطاب کر رہے تھے۔ اس تقریب کے مہمان خصوصی سربراہ پاک فضائیہ ائیر چیف مارشل ظہیر احمد بابر سدتھے ۔ مہمان خصوصی نے یونیورسٹی کے پروفیشنل امتحانات میں بالترتیب پہلی، دوسری اور تیسری پوزیشن حاصل کرنے والے طلباء کو طلائی، چاندی اور کانسی کے تمغوں سے نوازا۔

طلباء جنہوں نے ہر مضمون میں اعلیٰ نمبر حاصل کیئےانہیں بھی طلائی تمغوں سے نوازا گیا جبکہ ڈاکٹر سعد اظہر ملک ایم بی بی ایس میں 20 تمغے حاصل کرکے بہترین گریجوایٹ قرار پائے۔ پاک فضائیہ کے سربراہ نے میڈیکل گریجویٹس اور ان کے والدین کو اس یادگار دن پر مبارکباد دی۔

انہوں نے ایک تاریخی سنگ میل عبور کرنے پر فضائیہ میڈیکل کالج کی انتظامیہ اور اساتذہ کی کاوشوں کو بھی سراہا۔حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے سربراہ پاک فضائیہ ائیر چیف مارشل ظہیر احمد بابر سدھو نے اس امر کا اظہار بھی کیاکہ فضائیہ میڈیکل کالج کو صف اول کے میڈیکل کالجوں کی فہرست میں شامل رہنے کے لیے تعلیم کی ایسی جدید تدریسی حکمت عملیوں کو شامل کرنا ہو گا جو پیچیدہ طبی علوم کی وضاحت میں مددگار ثابت ہوں۔ اس تقریب میں مسلح افواج کے اعلیٰ حکام، سول سوسائٹی کے سینئر اراکین، میڈیکل یونیورسٹیوں کے وائس چانسلرز، پرائیویٹ و سول میڈیکل کالجوں کے پرنسپلز اور طلباء کے والدین نے بھی شرکت کی۔