صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی یاسین ملک کی سزا کی مذمت، فوری رہائی کا مطالبہ

اسلام آباد۔25مئی (اے پی پی):صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ حریت رہنما یاسین ملک کو بھارتی عدالت کی طرف سے جھوٹے الزامات اور سیاسی عزائم پر مبنی عمر قید کی سزا کی شدید مذمت کرتا ہوں، یاسین ملک کو سزا غیر منصفانہ اور انصاف کے بنیادی اصولوں کے خلاف ہے۔

بدھ کو ایوان صدر کے پریس ونگ سے جاری بیان کے مطابق صدر مملکت نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی عدلیہ نے ہمیشہ انتہا پسند ہندوتوا نظریے کے مفادات کا تحفظ کیا، بھارتی عدالتیں بھارتی سیاسی قیادت کی ایما ء پر مسلمانوں کو اِنصاف دینے سے انکاری ہیں، بھارتی عدالت کے فیصلے نے اقلیتوں کے حوالے سے بھارتی ذہنیت کو بے نقاب کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فیصلے سے پاکستانی قوم اور دنیا بھر کی انسانی حقوق کی تنظیموں کو شدید صدمہ پہنچا،

یاسین ملک کشمیری مسلمانوں کے حقوق کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں، کشمیری مسلمانوں کی جائز جدوجہد آزادی کو دہشت گردی سے جوڑنا غلط ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت کے جابرانہ اقدامات مقبوضہ جموں و کشمیر کے عوام کے عزم کو کمزور نہیں کرسکتے، کشمیری عوام اپنے حق خودارادیت کے حصول تک اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے۔

انہوں نے کہا کہ انسانی حقوق کی عالمی تنظیمیں اور اقوام متحدہ کشمیری مسلمانوں اور دیگر اقلیتوں کے خلاف بھارت کی جابرانہ اور نسل پرستانہ پالیسیوں کا سنجیدگی سے نوٹس لیں، عالمی برادری یاسین ملک کی فوری رہائی اور کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو روکنے کیلئے بھارت پر دباؤ ڈالے۔