پاک فوج وفاقی اورصوبائی حکومتوں کے تعاون سے سیلاب سے متاثرہ علاقوں کی بحالی کے کاموں کو مزید تیز کرنے کی ہر ممکن کوششیں جاری رکھے گی، جنرل قمرجاوید باجوہ

پشاور پولیس لائن دھماکے کے ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے گا، ایسے بزدلانہ اقدامات قوم کے عزم کو متزلزل نہیں کر سکتے، آرمی چیف جنرل سید عاصم منیر کا کورکمانڈرز کانفرنس سے خطاب

راولپنڈی۔20نومبر (اے پی پی):پاک فوج کے سربراہ جنرل قمرجاوید باجوہ نے کہا ہے کہ پاک فوج وفاقی اورصوبائی حکومتوں کے تعاون سے سیلاب سے متاثرہ علاقوں کی بحالی کے کاموں کو مزید تیز کرنے کی ہر ممکن کوششیں جاری رکھے گی۔ وہ بلوچستان کے دورہ کے موقع پر خطاب کررہے تھے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف نے اتوار کو بلوچستان کے شہر لسبیلہ کا دورہ کیا۔ انہوں نے سیلاب کی وجہ سے بے گھر افراد کے لئے لال گل گوٹھ میں تیار کیے گئے پری فیبری کیٹڈ ویلیج کا افتتاح کیا۔ گائوں لال گل گوٹھ حالیہ سیلاب میں بری طرح تباہ ہو گیا جس میں لائیو سٹاک، لوگوں کا ذاتی سامان اور بنیادی ڈھانچہ مکمل طور پر ختم ہو گیا۔ پری فیبریکیٹڈ ویلیج میں ایک پرائمری اسکول،شمسی توانائی اور ایک ٹیوب ویل کی سہولت بھی موجود ہے۔

فرنٹیئر ورکس آرگنائزیشن (ایف ڈبلیو او ) نے ریکارڈ مدت میں منصوبہ مکمل کیا۔ پاک فوج نے گائوں والوں سے جلد چھت فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا۔ آرمی چیف کو ایف ڈبلیو او کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل کمال اظفر نے سیلاب متاثرین کی بحالی کے کام کی پیش رفت کے بارے میں بریفنگ دی۔ آرمی چیف نے لال گل گوٹھ میں نئے پرائمری سکول کے اساتذہ اور طلبا اور مقامی دیہاتیوں سے ملاقات کی۔ آرمی چیف نے کہا کہ پاک فوج وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے تعاون سے شروع کیے جانے والے بحالی کے عمل کو تیز کرنے کے لیے ہر ممکن کوششیں جاری رکھے گی۔

اس موقع پر اعلیٰ سول و ملٹری حکام بھی موجود تھے۔بعد ازاں آرمی چیف نے کوئٹہ کور، ایف ڈبلیو او، فرنٹیئر کور(ایف سی) بلوچستان اور پاکستان کوسٹ گارڈز کے دستوں سے بات چیت کی اور حالیہ سیلاب میں ریسکیو، ریلیف اور بحالی کے عمل کے دوران ان کی کوششوں کو سراہا۔ چیئرمین این ڈی ایم اے لیفٹیننٹ جنرل انعام حیدراورانجینئر انچیف لیفٹیننٹ جنرل کاشف نذیربھی آرمی چیف کے ہمراہ تھے۔قبل ازیں آمد پر کور کمانڈر کوئٹہ لیفٹیننٹ جنرل آصف غفور نے آرمی چیف کا استقبال کیا۔